naya ek rishta paida kyun karen hum lyrics

read naya ek rishta paida kyun karen hum lyrics.

نیا اِک رشتہ پیدا کیوں کریں ہم

بچھڑنا ہے تو جھگڑا کیوں کریں ہم

خاموشی سے ادا ہو رسمِ دوری

کوئی ہنگامہ برپا کیوں کریں ہم

یہ کافی ہے کہ ہم دٌشمن نہیں ہیں

وفاداری کا دعوی کیوں کریں ہم

وفا اِخلاص قٌربانی مٌحبّت

اَب اِن لفظوں کا پیچھا کیوں کریں ہم 

زٌلیخاۓ عزیزاں بات یہ ہے 

بھلا گھاٹے کا سودا کیوں کریں ہم

ہماری ہی تمنّا کیوں کرو تٌم

تٌمھاری ہی تمنّا کیوں کریں ہم

کِیا تھا عہد جب لمحوں میں ہم نے

تو ساری عٌمر ایفا کیوں کریں ہم

اٌٹھا کر کیوں نہ پھینکیں ساری چیزیں

Advertisement

فقط کمروں میں ٹہلا کیوں کریں ہم

نہیں دٌنیا کو جب پروا ہماری

تو پھر دٌنیا کی پروا کیوں کریں ہم

برہنہ ہیں سَرِ بازار تو کیا

بھلا اندھوں سے پردہ کیوں کریں ہم

ہیں باشندے اِسی بستی کے ہم بھی

سو خود پہ بھی بھروسہ کیوں کریں ہم

پڑی رہنے دو اِنسانوں کی لاشیں 

زمیں کا بوجھ ہلکا کیوں کریں ہم

naya ek rishta paida kyun karen hum lyrics

naya ik rishta paida kiyun karain ham

bicharrna hai tu jhaggra kiyun karrain ham

khamoshi say ada ho rasm e durri

koi hangama barpa kiyun karrain ham

ye kafi hai kay ham dushman nahi hain

wafa dari ka dawa kiyun karain ham

wafa ikhlas qurbani muhabbat

ab inn laffzon ka peecha kiyun karrain ham

zulekhaye azizan baat yeh hai

bhalla ghatty ka sauda kiyun karain ham

hamari hi tamana kiyun karo tum

tumhari hi tamana kiyun karain ham

kiya tha ehad jab lamhon main ham nay

tu sarri umer aifa kiyun karain ham

utha kar kiyun na phainkain sari cheezain

faqt kamron main tehlla kiyun karain ham

nahi duniya ko jab parwa hamari

tu phir duniya ki parwa kiyun karain ham

barhana hain sar e bazar tu kiya

bhalla andhon say parda kiyun karain ham

hain bashinday issi basti kay ham bhi

so khud pay bhi bharosa kiyun karain ham

parri rehnay do insanon ki lashain

zamen ka bojh halka kiyun karain ham

read more

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge
%d bloggers like this: