Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

jigar moradabadi poetry in urdu best 20 sher

read jigar murad abadi poetry in urdu.

ہم نے سینے سے لگایا دِل نہ اپنا بن سکا

مٌسکرا کر تٌم نے دیکھا دِل تمھارا ہو گیا

ham nay seenay say lagaya dil na apna ban saka

muskara kay tum nay dekha dil tumhara ho giya

haseen teri ankhain - jigar muradabadi poetry in urdu
haseen teri ankhain – jigar muradabadi poetry in urdu

حسین تیری آنکھیں حسین تیرے آنسو

یہیں ڈوب جانے کو جی چاہتا ہے

haseen teri aankhain, haseen tery ansu

yahin doob janay ko ji chahta hai

تیری آنکھوں کا کٌچھ قصور نہیں

ہاں مٌجھ ہی کو خراب ہونا تھا

teri aankhon ka kuch qasoor nahi

haan mujh hi ko kharab hona tha

کٌچھ اس ادا سے آج وہ پہلو نشیں رہے

جب تک ہمارے پاس رہے ہم نہیں رہے

kuch iss adda say vo pehlo nasheen rahy

jab tak hamary pass rahy ham nahi rahy

سب کو ہم بھول گئے جوشِ جنوں میں لیکن

اِک تیری یاد تھی ایسی جو بھٌلائی نہ گئی

jigar murad abadi poetry in urdu

آ کہ تجھ بِن اِس طرح اے دوست گھبراتا ہوں میں

جیسے ہر شے میں کِسی شَے کی کمی پاتا ہوں میں

aa keh tujh bin iss tarah aye dost ghabrata hoon main

jaisy har shay main kisi shay ki kami pata hoon main

ہم کو مٹا سکے یہ زمانے میں دم نہیں

ہم سے زمانہ خود ہے ، زمانے سےہم نہیں

ham ko mita saky yeh zamanay main daam nahi

ham say zamana khud hai zamany say ham nahi

جو طوفانوں میں پلتے جا رہے ہیں

وہی دٌنیا بدلتے جا رہے ہیں

jo toofanon main paltay ja rahy hain

wahi duniya badalty ja rahy hain

میری زندگی تو گٌزری تیرے ہجر کے سہارے

میری موت کو بھی پیارے کوئی چاہیے بہانہ

meri zindagi tu guzri tery hijar kay sahary

meri maut ko bhi piyary koi chahiye bhana

ایک دِل ہے اور طوفانِ حوادث اے جگرؔ

ایک شیشہ ہے کہ ہر پتھر سے ٹکراتا ہوں میں

aik dil hai aur toofan e hawadis aye jigar

aik sheesha hai keh har pathar say takrata hoon main

دِل میں کِسی کے راہ کیے جا رہا ہوں میں

کِتنا حسین گٌناہ کیے جا رہا ہوں میں

dil main kisi kay rah kiye ja raha hoon main

kitna haseen gunah kiye ja raha hoon main

اِک لفظ مُحبت کا ادنٰی یہ فسانہ ہے

سمٹے تو دِل عاشق پھیلے تو زمانہ ہے

ik lafz muhabat ka adna yeh fasana hai

simtay tu dil aashiq phaily tu zamana hai

میری بربادیاں درست مگر

تٌو بتا کیا تٌجھے ثواب ہٌوا

meri barbadiyan darust magar

tu bata kiya tujhy sawab huwa

Yeh hai Maikada yahan rind Hai lyrics

یہ ہے مے کدہ یہاں رند ہیں یہاں سب کا ساقی امام ہے

یہ حرم نہیں ہے اے شیخ جی یہاں پارسائی حرام ہے

جو ذرا سی پی کے بہک گیا اسے مے کدے سے نکال دو

یہاں تنگ نظر کا گزر نہیں یہاں اہلِ ظرف کا کام ہے۔

کوئی مست ہے کوئی تشنہ لب تو کِسی کے ہاتھ میں جام ہے

مگر اس پہ کوئی کرے بھی کیا یہ تو مے کدے کا نظام ہے

یہ جناب شیخ کا فلسفہ ہے عجیب سارے جہان سے
جو وہاں پیو تو حلال ہے جو یہاں پیو تو حرام ہے

اسی کإینات میں اے جگرؔ کوئی انقلاب اٌٹھے گا پھر
کہ بٌلند ہو کے بھی آدمی ابھی خواہشوں کا غٌلام ہے

Yeh hai Maikada yahan rind Hain yahan sab ka saqi imam hai

ye haram nahi hai aye shekh ji yahan parsai haram hai

jo zara si pee kay behak giya usay mae kady say nikal do

yahan tang nazar ka guzar nahi yahan ehl e zarf ka kaam hai

koi mast hai koi tishna lab tu kisi kay hath main jaam hai
magar iss pay koi kary bhi kiya ye tu mae kaday ka nizam hai

yeh janab sheikh ka falsafa hai ajeeb saray jahan say
jo wahan piyo tu halal hai jo yahan piyo tu haram hai

issi kainat main aye jigar koi inqlab uthay ga phir
keh buland ho kay bhi aadmi abhi khwahishon ka ghulam hai

read more

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge