Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

ahmad mushtaq poetry urdu best 20 sher

read ahmad mushtaq poetry urdu.

سنگ اُٹھانا تو بڑی بات ہے اب شہر کے لوگ

آنکھ اٹھا کر بھی نہیں دیکھتے دیوانے کو

sang uthana tu barri baat hai aab shehere kay log

aankh utha kar bhi nahi dekhtay dewanay ko

خیر بدنام تو پہلے بھی بہت تھے لیکن

تم سے مِلنا تھا کہ پَر لگ گئے رسوائی کو

kher badman tu pehlay bhi buhat thay lekin

tum say milna tha kay parr lag gaye ruswai ko

وہ وقت بھی آتا ہے ، جب آنکھوں میں ہماری 

پھرتی ہیں وہ شکلیں جنہیں دیکھا نہیں ہوتا

wo waqt bhi aata hai jab ankhon main hamari

phirti hain vo shaklain jinhain dekha nahi hota

تُم آئے ہو تُمہیں بھی آزما کر دیکھ لیتا ہوں 

تُمہارے ساتھ بھی کُچھ دور جا کر دیکھ لیتا ہوں

tum aaye ho tumhain bhi aazma kay dekh leta hoon

tumhary sath bhi kuch duur ja kar dekh leta hoon

چاند بھی نِکلا ستارے بھی برابر نِکلے

مُجھ سے اچھے تو شبِ غم کے مُقدر نِکلے

chand bhi nikla sitary bhi barabar niklay

mujh say achay tu shab e gham kay muqader niklay

ahmad mushtaq poetry in urdu

تنہائی میں کرنی تو ہے اک بات کِسی سے

لیکن وہ کِسی وقت اکیلا نہیں ہوتا

tanhai main karni tu hai ik baat kisi say

lekin wo kisi waqt akela nahi hota

یہ تنہا رات یہ گہری فِضائیں 

اِسے ڈھونڈیں کہ اسے بھول جائیں

yeh tanha raat yeh gehri fazain

issay dhundain keh issay bhool jain

اس معرکے میں عشق بیچارہ کرے گا کیا

خود حسن کو ہیں جان کے لالے پڑے ہوئے

iss maarkay main ishq bechara karay ga kiya

khud husn ko hain jaan kay lalay parry huwy

کیسے آ سکتی ہے ایسی دل نشین دنیا کو موت

کون کہتا ہے کہ یہ سب کچھ فنا ہو جائے گا

kesy aa sakti hai aisi dilnasheen duniya ko maut

kon kehta hai ke ye sab kuch fana ho jaye ga

چپ کہیں اور لیے پھرتی تھی باتیں کہیں اور

دن کہیں اورگزرتےتھےتوراتیں کہیں اور

chup kahin aur liye phirti thi batain kahin aur

din kahin aur guzartay thay tu raatain kahin aur

رونے لگتا ہوں محبت میں تو کہتا ہےکوئی

کیا ترےاشکوں سے یہ جنگل ہراہوجائےگا

ronay lagta hoon muhabbat main tu kehta hai koi

kiya tery ashkon say yeh jangal hara ho jaye ga

read more

پتااب تک نہیں بدلا ہمارا

وہی گھر ہےوہی قصہ ہمارا

read more

thanx for free image download

https://unsplash.com/

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge