Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

chand poetry in urdu best 10 sher

read chand poetry in urdu

پوچھا جو اٌن سے چاند نکلتا ہے کِس طرح

زٌلفوں کو رٌخ پہ ڈال کے جھٹکا دیے کہ یوں

pucha jo un say chand nikalta hay kis tarah

zulfon ko rukh pay daal kay jhatka diye kay youn

چاند کِسی کا ہو نہیں سکتا چاند کِسی کا ہوتا ہے

چاند کی خاطر ضِد نہیں کرتے اے میرے اچھے اِنشا چاند

chand kisi ka ho nahi sakta, chand kisi ka hota hai

chnd ki khatir zidd nahi kartay aye mary achay insha chaand

ریزہ ریزہ ہو کے بِکھرا ہے ہواٶں میں بدن

کِس قدر مہنگی پڑی ہے چاند سے یاری مٌجھے

reza reaza ho kay bikhra hai havaon main badan

kis qadar mehngi parri hai chaand say yarri mujhay

مٌدّت ہوٸ آنکھوں نے وہ منظر نہیں دیکھا

اِک چاند نِکلتا تھا کبھی شام سے پہلے

muddat hui aankhon nay vo manzar nahi dekha

ik chaand nikalta tha kabhi shaam say pehlay

ستارے توڑ لایا ہوں مگر پھر سے نئی ضِد ہے

سِتارے میں نہیں لیتی مٌجھے تو چاند لا کر دو

sitary torr laya hoon magar phir say nai zidd hai

sitary main nahi leti mujhy tu chaand la kay do

chand poetry in urdu

تنہا اداس چاند کو سمجھو نہ بے خبر

ہر بات سٌن رہا ہے مگر بولتا نہیں

tanha udas chaand ko samjho na bay khabar

har baat sun raha hai magar bolta nahi

میرا چاند تو کہیں نہیں نظر آیا

لوگوں نے کون سا چاند دیکھا ہے

mera chaand tu kahin nahi nazar aaya

logon nay kon sa chaannd dekha hai

اٌدھر سے چاند تٌم دیکھو، اِدھر سےچاند ہم دیکھیں

نِگاہیں یوں ٹکرإیں کہ دِلوں کی عید ہو جاۓ

udher say chhand tum dekho, idher say chand ham dekhain

nigahain youn takrrain keh dilon ki eid ho jaye

آج پھر چاند اٌفق پر نہیں اٌبھرا مٌحسن

آج پھر رات نہ گٌزرے گی سٌہانی اپنی

aaj phir chhannd ufaq par nahi ubhra muhsin

aaj phir raat na guzray gi suhani apni

ہے عجب مزاج کا شخص وہ کبھی ہم نفس کبھی اجنبی

کبھی چاند اس نے کہا مٌجھے کبھی آسماں سے گرا دِیا

hai ajab mazaj ka shakhs vo kabhi ham nafas kabhi ajnabi

kabhi chand us nay kaha mujhy kabhi aasman say gira diya

روز تاروں کی نمإیش میں خلل پڑتا ہے

چاند پاگل ہے اندھیرے میں نِکل پڑتا ہے

roz taroon ki numaish main khalal parrta hai

chand pagal hai andhery main nikal parrta hai

read more

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge