Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

eid poetry in urdu – eid mubarak in urdu

read eid poetry in urdu. eid ul adha, eid ul fitr poetry in urdu.

خُدا کرے تمھیں یہ عید راس آجائے

تم جس کو چاہو ، وہ تمھارے پاس آجائے

Khudā kārāy ṯumhāɨn yeh eɨd rāās āā jāye

Ṯum jɨs kō ēhāhō, wō ṯumhārāy pāss āā jāye

dua a hay aap dekhain
dua a hay aap dekhain

دُعا ہے آپ دیکھیں زندگی میں بے شمار عیدیں

خوشی سے رقص کرتی ،مسکراتی، بہار عیدیں

Duāā hāy āāp dekhāɨn zɨndāgɨ māɨn be-shumār eɨdāɨn

Khushɨ sāy rāqs kārṯɨ, muskurāṯɨ bāhār eɨdāɨn

eid aai hay mussarat ki - eid poetry in urdu - besturdupoetry.pk
eid aai hay mussarat ki – eid poetry in urdu – besturdupoetry.pk

عید آئی ہے ، مسرت کی پیا می بن کر

وہ مسرت جو تیری عید سے وابستہ ہے

Eɨd āāɨ hāy, mussārāṯ kɨ pɨyāmɨ bān kār

Wō mussārāṯ jō ṯerɨ eɨd sāy wābāsṯā hāy

uss say milna tu usay eid mubarak kehna - eid poetry in urdu - besturdupoetry.pk
uss say milna tu usay eid mubarak kehna

اُس سے مِلنا تو اُسے عید مُبارک کہنا

یہ بھی کہنا کہ مری عید مبارک کر دے

Uss sāy mɨlnā ṯu usāy eɨd Mubārāk kehnā

Yeh bhɨ kehnā keh merɨ eɨd Mubārāk kār dāy

inn hi sochon main
inn hi sochon main

ان ہی سوچوں میں گزر جاتی ہیں عیدیں میری

کیا مجھے بھول کے وہ عید مناتا ہو گا

Ɨņņ hɨ sōchōņ māɨņ guzār jāṯɨ hāāņ ēɨdāɨņ meri

Kɨyā mujhāy bhōōl kāy vō ēɨd māņāṯṯā hō gā

jis kay baghair sham guzri na thi
jis kay baghair sham guzri na thi

جس کے بغیر  شام گُزری نہ تھی کبھی

اُس کے بغیر “عید “گزر گئی

Jɨs kāy bāghāɨr shām guzrɨ ņā ṯhɨ kābhɨ

Uss kāy bāghāɨr ēɨd guzār gāɨ

eid poetry in urdu

eid kay din na sahi - eid poetry in urdu
eid kay din na sahi

عید کے دِن نہ سہی ، عید کے بعد سہی

عید تو ہم بھی منائیں گے، تیری دید کے بعد

Ēɨd kāy dɨņ ņā sāhɨ, ēɨd kāy bāād sāhɨ

Ēɨd ṯu hām bhɨ māņņāɨņ gāɨņ, ṯērɨ dēēd kāy bāād

aankh tum ko hi jab na paye gi - eid poetry in urdu
aankh tum ko hi jab na paye gi – eid poetry in urdu

آنکھ تم کو ہی جب نہ پائے گی

عید کیسے منائی جائے گی

aankh tum ko hi jab na paye gi

eid kesay manai jaye gi

talkhiyan chubhnay lagin jab zeest kay pemanay main
talkhiyan chubhnay lagin jab zeest kay pemanay main

تلخیاں چبھنے لگیں جب زیست کے پیمانے میں

درد کے ماروں نے گھول کے پیا عید کا چاند

talkhiyan chubhnay lagin jab zeest kay pemanay main

dard kay maroon nay ghol kay piya eid ka chand

Eid shayari in punjabi

hun tay aa kay mil ja saanu eid nu din vi thorray reh gaye
hun tay aa kay mil ja saanu eid nu din vi thorray reh gaye

لیکھاں وِچ وچھوڑے رہ گئے

اتھرو رو رو تھوڑے رہ گئے

اِک نہ مَنّی اونے میری

ہتھ وِی میرے جوڑے رہ گئے

بارش آئی پر توں نہ آیا

گُلاب دے پھُل وی توڑے رہ گئے

ہُن تے آکے مِل جا سانوں عید نوں دِن وی تھوڑے رہ گئے

lekhan vich vichorray reh gaye

athro ro ro thorray reh gaye

ik na manni oonay meri

hath vi meray jorray reh gaye

barish aai per tuun na aya

gulab day phul vi thorray reh gaye

hun tay aa kay mil ja saanu eid nu din vi thorray reh gaye

eid ul adha mubarak poetry

ham tu qurbani-youn kay aadi hain - eid ul adha mubarak - besturdupoetry.pk
ham tu qurbani-youn kay aadi hain – eid ul adha mubarak poetry

جو بڑھاتے ہیں بھاو منڈی کا، اُن کی من مانیوں کے عادی ہیں

دیں گے مہنگائی میں بھی قُربانی، ہم تو قُربانیوں کے عادی ہیں

jo barrhatay hain bhao mandi ka

un ki man manoyoun kay aadi hain

dain gain mehngai main bhi qurbani

ham tu qurbani-youn kay aadi hain

eid ul adha poetry in urdu

ye barri eid nahi aasan, bas itna samjh lijye
ye barri eid nahi aasan, bas itna samjh lijye

یہ بڑی عید نہیں آساں، بس اِتنا سمجھ لیجیے

بہت سارے گوشت کے شاپر ہیں اور رشتہ داروں کو پہنچانے ہیں

ye barri eid nahi aasan, bas itna samjh lijye

buht sary gosht kay shapper hain aur rishta daron ko puhnchany hain

eid poetry for friends

ہو توجہ تمہاری اگر بادشاہ، میرا دِل ہو خوشی کا نگر بادشاہ

گُفتگو جو کرے تُو مُحبت بھری، عید ہو جائے میری اَمر بادشاہ

ho tuwaja tumhari agar badsha, mera dil ho khushi ka nagar badsha

guftagu jo karay tu muhabbat bhari, eid ho jaye meri amar badshah

ahbab puchatay haan barri sadagi kay sath - eid poetry in urdu
ahbab puchatay haan barri sadagi kay sath – eid mubarak poetry

احباب پوچھتے ہیں بڑی سادگی کے ساتھ

میں اَب کے سال عید مناوں گا کِس طرح

ahbab puchatay haan barri sadagi kay sath

main abb kay saal eid manaon ga kis tarah

log kehtay haan keh eid aai hai
log kehtay haan keh eid aai hai

لوگ کہتے ہیں کہ عید آئی ہے

تُم آجاو تو یقین آجائے

log kehtay haan keh eid aai hai

tum aa jao tu yaqeen aa jaye

eid mubarak shayari

کہہ دیں وہ مُحبت سے اَگر عید مُبارَک

مِل جائے مُرادوں کا ثمر عید مُبارَک

مُمکِن ہی نَہیں غَم سے مَفر عید مُبارَک

حالات مُخالف ہیں مَگر عید مُبارَک

اَے کاش ہَمیں عید ہو اَیسی کوئی حاصل

کہتے رہیں ہَم شام و سحر عید مُبارَک

ہو جائیں سبھی شکوے گلے دوُر دِلوں سے

وُہ کہہ دیں گَلے مِل کے اَگر عید مُبارَک

جَب آپ ہَمیں اَپنا سَمجھتے ہیَں تو کہیئے

ہَنستے ہُوئے بے خَوف و خَطر عید مُبارَک

محمودؔ وہ ہوتے ہیَں بُہت قَابل عِزّت

کہتے ہیں جِنہیں اہل نَظر عید مُبارَک

eid mubarak poetry
eid mubarak poetry

Keh dain wo muhabbat say agar eid Mubarak

Mil jaye muradon ka samar eid Mubarak

Mumkin hi nahi gham say mafar eid Mubarak

Halat mukhalif hain magar eid Mubarak

Aye kash hamain eid ho aisi koi hasil

Kehtay rahain ham sham-o-sehar eid Mubarak

Ho jain sabhi shikway gilay dur dilion say

Wo keh dain galay mil kay agar eid Mubarak

Jab aap hamain apna samajhtay haan tu kahiye

Hanstay huway be-khauf o khatar eid Mubarak

Mehmood wo hotay haan buhat qabil-e-izzat

Kehtay haan jinhain ehal-e-nazar eid mubarak

eid ghamgeen poetry

Eidain tumharay baad bhi aati rahin magar
Eidain tumharay baad bhi aati rahin magar – eid ul adha poetry

عیدیں تُمہارے بعد بھی آتی رہیں مگر

کپڑے نہیں سِلے کئی موسم گُزر گئے  

Eidain tumharay baad bhi aati rahin magar

Kaprray nahi silay kai mausam guzar gaye

eid aai tum na aaye kiya maza hai eid ka - eid poetry in urdu
eid aai tum na aaye kiya maza hai eid ka – eid poetry in urdu

عید آئی تُم نہ آئے کیا مزا ہے عید کا

عید ہی تو نام ہے، اِک دوسرے کی دید کا

  1. eid aai tum na aaye kiya maza hai eid ka
  2. eid hi tu naam hai ik dosary ki deed ka
Eid aya karay ab eid main kiya rakha hai
Eid aya karay ab eid main kiya rakha hai

  غم ہی غم ہیں ، تیری اُمید میں کیا رکھا ہے

عید آیا کرے اَب عید میں کِیا رکھا ہے          

Gham hi gham haan, teri umeed main kiya rakha hai

Eid aya karay ab eid main kiya rakha hai

Ab khuda janay kahan un kay thikanay hain
Ab khuda janay kahan un kay thikanay hain

پیروی کرتے تھے ، تقلید کِیا کرتے تھے

میری ہر بات کی تائید کِیا کرتے تھے     

اَب خُدا جانے کہاں اُن کے ٹھکانے ہیں

جو میرے ساتھ کبھی عید کِیا کرتے تھے       

Pervi kartay thay taqleed kiya kartay thay

Meri har baat ki taeed kiya karty thay

Ab khuda janay kahan un kay thikanay hain

Jo meray sath kabhi eid kiya kartay thay

eid poetry after eid

chalo acha huwa eid ab kay bhi tanha guzri
chalo acha huwa eid ab kay bhi tanha guzri

چلو اچھا ہٌوا عید اَب کے بھی تنہا گٌزری

گلے مِلتے تو بہت روتے جو تٌم آ جاتے

chalo acha huwa eid ab kay bhi tanha guzri

galy milty tu buhat roty jo tum aa jaty

jin rahon sy tum gzro
jin rahon sy tum gzro

جن راہوں سے تم گزرو

ان راہوں کو بھی عید مبارک

jin rahon sy tum gzro

un rahoon ko bi eid mubarak

phir bana lain gaiy naye kaprry, yeh eid tu har saal aati hai
phir bana lain gaiy naye kaprry, yeh eid tu har saal aati hai

غریب ماں اپنے بچوں کو پیار سے یوں مناتی ہے

پھر بنا لیں گے نۓ کپڑے، یہ عید تو ہر سال آتی ہے

phir bana lain gaiy naye kaprry, yeh eid tu har saal aati hai

ghareeb maan apny bachon ko piyar say youn manati hai

ham nay tujhy dekha nahi kiya eid manayain
ham nay tujhy dekha nahi kiya eid manayain

ہم نے تٌجھے دیکھا نہیں کیا عید منإیں

جِس نے تٌجھے دیکھا ہو اٌسے عید مٌبارک

ham nay tujhy dekha nahi kiya eid manayain

jis nay tujhy dekha ho ussy eid mubarak

eid kitna meetha lafz hai na
eid kitna meetha lafz hai na

عید کِتنا میٹھا لفظ ہے نہ

پھیکا پڑ جاۓ گا اگر تٌم نہ آۓ تو

eid kitna meetha lafz hai na

pheka parr jaye ga agar tum na aye tu

eid kay baad wo aaye hain milnay kay liye
eid kay baad wo aaye hain milnay kay liye

عید کے بعد وہ آئے ہیں ملنے کےلیے 

عید کا چاند نظر آنے لگا عید کے بعد

eid kay baad wo aaye hain milnay kay liye

eid ka chand nazar aanay laga eid kay baad

عید غمگین شاعری

مِل کے ہوتی تھی کبھی عید بھی دیوالی بھی

اَب یہ حالت ہے کہ ڈر ڈر کے گلے مِلتے ہیں

mil kay hoti thi kabhi eid bhi dewali bhi

ab ye halat hai ke dar dar kay galy miltay hain

اے صاحبِ عِلم ذرا یہ بتاٶ مجھ کو

یار کا دیدار نہ ہو تو کیا عید ہوتی ہے

aye sahib e illm zara ye batao mujh ko

yaar ka deedar na ho tu kiya eid hoti hai

شاید تم آئومیں نے اسی انتظار میں

اب کے برس کی عید بھی تنہا گزار دی

shayad tum aao main nay issi intzar main

ab kay bars bhi eid tanha guzar di

عید کا دن ہے گلے آج تو مل لے ظالم

رسم دٌنیا بھی ہے موقع بھی ہے دستور بھی ہے

eid ka din hai galy aaj tu mil lay zalim

rasm e duniya bhi hai mauqa bhi hai dastoor bhi ha

تُجھ کو میری نہ مُجھے تیری خبر جائے گی

عید اب کے بھی دبے پاوں گُزر جائے گی

tujh ko meri na mujhy teri khabr jaye gi

eid ab kay bhi dabay paon guzar jaye gi

عید آ گئی پھر دِل پہ زخم لگاۓ گی

اپنے محبوب سے دوری ہمیں ستاۓ گی

read more

خود تو آیا نہیں اور عید چلی آئی

عید کے روز مُجھے یوں نہ ستائے کوئی

khud tu aya nahi aur eid chali aai

eid kay roz mujhy youn na sitaye koi

read more

thanx for free image download

https://onehdwallpaper.com/

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge