Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

ameer minai poetry in urdu best 10 sher

read ameer minai poetry in urdu.

آہوں سے سوز عشق مٹایا نہ جائے گا

پھونکوں سے یہ چراغ بُجھایا نہ جائے گا

aahon se soz e ishq mitaya na jae ga

phonkon se yeh charagh bhujaya na jae ga

khanjar chaly kisi pay taraptay hain ham ameer
khanjar chaly kisi pay taraptay hain ham ameer

خنجر چلے کِسی پہ تڑپتے ہیں ہم امیرؔ

سارے جہاں کا درد ہمارے جگر میں ہے

khanjar chaly kisi pay taraptay hain ham ameer

saray jahan ka dard hamary jigar main hai

aye zabt dekh ishq ki un ko khabr na ho

اے ضبط دیکھ عشق کی اٌن کو خبر نہ ہو

دِل میں ہزار درد اٌٹھے آنکھ تر نہ ہو

aye zabt dekh ishq ki un ko khabr na ho

dil main hazar dard uthay aank tarr na ho

ہلال و بدر دونوں میں امیرؔ ان کی تجلّی ہے

یہ خاکہ ہے جوانی کا یہ نقشہ ہے لڑکپن کا

hilal o badar dono main ameer un ki tajali hai

ye khaka hai jawani ka ye naqsha hai larrakpan ka

کَشتیاں سَب کی کِنارے پہنچ جاتی ہیں

ناخٌدا جن کا نہیں ان کا خٌدا ہوتا ہے

kashtiyan sab ki kinary puhanch jaati hain

nakhuda jin ka nahi hota un ka khuda hota hai

ameer minai poetry in urdu

پہلے تو مٌجھے کہا نِکالو، پھر بولے غریب ہے بٌلا لو

بے دل رکھنے سے کیا فإیدہ، تم جان سے مجھ کو مار ڈالو

pehly tu mujhy kaha nikalo, phir bolay ghareeb ha bula lo

bay dil rakhnay say kiya faida, tum jan say mujh ko marr dalo

وہ تٌجھے بھول گئے تٌجھ پہ بھی لازم ہے امیرؔ

خاک ڈال، آگ لگا، نام نہ لے، یاد نہ کر

wo tujhy bhool gaye tujh pay bhi lazam hai ameer

khak daal aag laga naam na lay yaad na kar

میرے بس میں یا تو یا رب، وہ ستم شعار ہوتا

یہ نہ تھا تو کاش دِل پر مٌجھے اختیار ہوتا

mery bass main ya tu ya rabb, wo sitam shaar hota

ye na tha tu kash dil par mujhy ikhtiyar hota

فراقِ یار نے بے چین مٌجھ کو رات بھر رکھا

کبھی تکیہ اِدھر رکھا ، کبھی تکیہ اٌدھر رکھا

firaq e yaar nay bay chain mujh ko raat bhar rakha

kabhi takiya idher rakha, kabhi takiya udher rakha

وہ دٌشمنی سے دیکھتے ہیں، دیکھتے تو ہیں

میں شاد ہٌوں کہ ہٌوں تو کِسی کی نِگاہ میں

vo dushmni say dekhty hain, dekhty tu hain

main shad hoon ky hun tu kisi ki nigah main

الله رے سادگی، نہیں اتنی انھیں خبر

میّت پہ آ کے پوچھتے ہیں اِن کو کیا ہٌوا

read more

Special thanks for free image download

https://unsplash.com/

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

CommentLuv badge