Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

zahid fakhri poetry in urdu best 10 sher

read zahid fakhri poetry in urdu

اُٹھانا خُود ہی پڑتا ہے تھکا ٹوٹا بدن فخری

کہ جب تک سانس چلتی ہے کوئی کاندھا نہیں دیتا

uthana khud hi parrta hai thaka toota badan fakhri

keh jab tak sans chalti hai koi kandha nahi deta

رات ہے سر پر کوئی سورج نہیں

کِس لیے پھِر سائبانوں میں رہوں

raat hai sar par koi suraj nahi

kis liye phir saibanon main rahun

اسے اپنے فردا کی فکر تھی، جو میرا واقفِ حال تھا

وہ جو اس کی صٌبح عروج تھی، وہی میرا وقتِ زوال تھا

usay apny farda ki fikar thi, jo mera waqif e haal tha

vo jo us ki subh iroj thi wohi mera waqt e zival tha

وہ مِلا تو صدّیوں کے بعد بھی میرے لب پہ کوئی گِلہ نہ تھا

اٌسے میری چٌپ نے رٌلا دِیا، جِسے گٌفتگو میں کمال تھا

vo mila tu sadyoun kay baad bhi mery lab pay koi gila na tha

usay meri chup nay rulla diya jisy guftgu main kamal tha

میں کہ افسردہ مکانوں میں رہوں

آج بھی گٌزرے زمانوں میں رہوں

main kehafsurda makanon main rahun

aaj bhi guzry zamanon main rahun

zahid fakhri poetry in urdu

دٌشوار زمینوں کے سفر اتنے کیے ہیں

اب دشت مٌجھے آبلہ پائی نہیں دیتا

dushwar zameenon kay safar itnay kiye hain

ab dasht mujhy aabla pai nahi deta

پتھر کس کو مارو گے جب ان کے سر بھی اپنے ہیں

سانجھی ہیں دیواریں سب، سارے گھر بھی اپنے ہیں

pathar kis ko maro gaiy jab un kay sar bhi apny hain

sanjhi hain dewarain sab, sary ghar bhi apny hain

چہرے پہ اپنے دستِ کرم پھیرتی ہوئی

ماں رو پڑی ہے سر کو میرے چومتی ہوئی

chehry pay apnay dast e karm pherti hui

maan ro parri hai sar ko mery chumti hui

مٌحبّت کے سفر میں کوئی بھی رستہ نہیں دیتا

زمیں واقف نہیں بنتی فلک سایہ نہیں دیتا

muhabbat kay safar main koi bhi rasta nahi deta

zameen waqif nahi banti falak saya nahi deta

اگر فخری، وہ مٌحبٌتوں کا ثبوت مانگے

تو اس سے کہنا وہ ہجرتوں کی کتاب دیکھے

agar fakhri vo muhabbaton kay sabut mangy

tu us say kehna vo hijraton ki kitab dekhy

نمی آئی ہے کٌچھ اس کی آنکھ میں بھی فخریؔ

زمینِ سنگ سے چشمہ اٌبلنے والا ہے

read more

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

CommentLuv badge