Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

zafar iqbal poetry in urdu best 20 sher

read zafar iqbal poetry in urdu

یہاں کِسی کو بھی کٌچھ حسبِ آرزو نہ مِلا

کِسی کو ہم نہ مِلے اور ہم کو تٌو نہ مِلا

yahan kisi ko bhi kuch hasb e aarzo na milla

kisi ko ham na mily aur ham ko tu na mila

آثار کوٸ چاند چمکنے کے بہت ہیں

اسباب ابھی دِل کے دھڑکنے کے بہت ہیں

aasar koi chand chamaknay kay buhat hain

asbab abhi dil kay dharraknay kay buhat hain

شبِ حیات میں اس مہرباں کا مہماں تھا

جو شہر چھوڑ گیا شہر میں بٌلا کے مٌجھے

shab e hayat main us mehraban ka mehman tha

jo sheher chorr giya sheher main bulla kay mujhy

میں چوم لیتا ہوں اس راستے کی خاک ظفرؔ

جہاں سے کوٸ بہت بے خبر گٌزرتا ہے

main choom leta hoon us rastay ki khak zafar

jahn say koi buhat bay khaber guzarta hai

ہنسی خوشی یوں دِن کاٹنا ہے فرقت کے

اداس پھرنا نہیں ، مبتلا نہیں رہنا

hansi khushi youn din katna hai furqat kay

udas phirna nahi, mubtala nahi rehna

zafar iqbal poetry in urdu

رات خالی ہی رہے گی میرے چاروں جانب

اور یہ کمرہ تیرے خواب سے بھر جاۓ گا

raat khali hi rahy gi mery charon janab

aur ye kamra tery khwab say bhar jaye ga

رہا اگرچہ خفا، تھا تو شہر میں موجود

بہت اداس میں اس بدگماں کے بعد ہوا

raha agarcha khafa, tha tu sheher main maujood

buhat udas main us badguman kay baad hua

خامشی اچھی نہیں انکار ہونا چاہیے

یہ تماشا اب سر بازار ہونا چاہیے

khamashi achi nahi inkar hona chahiye

ye tamasha ab sar e bazar hona chahiye

یہ دِل بٌرا سہی سرِبازار تو نہ کہہ

آخر تو اس مکان میں کچھ دِن رہا بھی ہے

ye dil bura sahi sar-e-bazar tu na keh

aakhir tu iss makan main kuch din raha bhi hai

زندگی تٌو کبھی نہیں آٸ

موت آٸ ذرا ذرا کر کے

zindagi tau kabhi nahi aai

maut aai zara kar kay

خوشی مِلی تو یہ عالم تھا بدحواسی کا

کہ دھیان ہی نہ رہا غم کی بے لباسی کا

khushi mili tu yeh aalam tha baad-hawasi ka

key dhiyan hi na raha gham ki bay libasi ka

جھوٹ بولا ہے تو قإیم بھی رہو اس پہ ظفرؔ

آدمی کو صاحبِ کردار ہونا چاہیے

jhot bola hai tu qaim bhi raho iss pay zafar

admi ko sahib e kardar hona chahiye

اس طرح بھی چلا ہے کبھی کاروبارِ شوق

روٹھے کوئی تو اس کو منا لینا چاہیے

iss Farah bhi chala hai kabhi karobar e shouq

ruthy koi tu us ko mana Lena chahiye

read more

thanks for free image

read more

https://www.pinterest.com/

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

CommentLuv badge