Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

josh malihabadi poetry in urdu best 10 sher

read josh malihabadi poetry in urdu

دِل کی چوٹوں نے کبھی چین سے رہنے نہ دِیا

جب چلی سرد ہوا میں نے تٌجھے یاد کیا

dil ki choton nay kabhi chain say rehnay na diya

jab chali sard hawa main nay tujhy yaad kiya

آڑے آیا نہ کوٸ مٌشکل میں

مشورے دے کے ہٹ گۓ احباب

aarry naa aya koi mushkil main

mashwary day kay haat gaye ehbab

ایک دن کہہ لیجیے جو کٌچھ ہے دِل میں آپ کے

ایک دِن سٌن لیجیے جو کٌچھ ہمارے دِل میں ہے

aik din keh lijye jo kuch hai dil main aap ky

aik din sun lijye jo kuch hamary dil main hai

مٌجھ کو تو ہوش نہیں تم کو خبر ہو شاید

لوگ کہتے ہیں کہ تم نے مٌجھے برباد کیا

mujh ko tu hosh nahi tum ko khabar ho shayad

log kehtay hain key tum nay mujhy barbad kiya

گٌزر رہا ہے ادھر سے تو مٌسکراتا جا

چراغ مجلس روحانیاں جلاتا جا

guzar raha hai idher say tu muskurata ja

charagh e muflis e rohaniyan jalata ja

josh malihabadi poetry in urdu

اس نے وعدہ کیا ہے آنے کا

رنگ دیکھو غریب خانے کا

us nay vada kiya hai aany ka

rang dekho ghareeb khany ka

کسی کا عہد جوانی میں پارسا ہونا

قسم خٌدا کی یہ توہین ہے جوانی کی

kisi ka ehd e jawani main parsa hona

qasam khuda ki ye toheen hai jawani ki

اس کا رونا نہیں کیوں تم نے کیا دل برباد

اس کا غم ہے کہ بہت دیر میں برباد کیا

iss ka rona nahi kiyun tum nay kiya dil barbad

iss ka gham hai ky buht dair main barbad kiya

ہم گۓ تھے اس سے کرنے شکوہ درد فراق

مسکرا کر اس نے دیکھا سب گلہ جاتا رہا

ham gaye thay us say karny shikwa e dard e firaq

muskara kar us nay dekha sab gilla jata raha

اب تک نہ خبر تھی مٌجھے اٌجڑے ہٌوے گھر کی

وہ آۓ تو گھر بے سر و ساماں نظر آیا

ab tak na khbr thi mujhy ujrray huwy ghar ki

vo aaye tu ghar bay sar o saman nazar aaya

ثبوت ہے یہ مٌحبّت کی سادہ لوحی کا

جب اس نے وعدہ کیا ہم نے اعتبار کیا

saboot hai ye muhabat ki sada lohi ka

jab us nay wada kiya ham nay eitbar kiya

read more

میری حالت دیکھیے اور ان کی صورت دیکھیے

پھر نگاہِ غور سے قانونِ قٌدرت دیکھیے

meri halat dekhye aur un ki surat dekhye

phir nigah e ghor say qanon e qudrat dekhye

read more

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge