Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

ibn e insha poetry in urdu best 20 sher

read ibn e insha poetry in urdu.

اِنشّإ جی اُٹھو اَب کُوچ کَرو ، اِس شہر میں جِی کو لَگانا کِیا
وحشی کو سکوں سے کیا مطلب، جوگی کا نگر میں ٹھکانہ کیا

Īnsẖā Jī Ūtẖō, Āb Kōōcẖ Kārō, Īss Sẖāẖr Māī Jī Kā Lāģānā Kyā
Wāẖsẖī Kō Sūkōō’N Sāy Kyā Mātlāb, Jōģī Kā Nāģār MāīN Tẖīkānā Kyā

اس روز کو ان کو دیکھا ہے اب خواب کا عالم لگتا ہے
اس روز جو ان سے بات ہوئی وہ بات بھی کیا افسانہ کیا

Ūss Rōz Jō Ūnkō Dēkẖā ẖāī, Ābb Kẖūwāāb Kā Āālām Lāģtā ẖāī
Ūss Rōz Jō Ūnn Sāy Bāāt ẖūēē, Wō Bāāt Bẖī Tẖī Āfsānā Kyā

اس کو بھی جلا دہکتے ہوئے من، اک شعلہ آگ بھبھولا بن
یوں آنسو میں بہہ جانا کیا، یوں مٹی میں مل جانا کیا

Ūskō Bẖī Jālā Dūkẖtāy ẖūāy Mūn, Īk Sẖōlā Āāģ Bẖābẖūlā Bānn
Yōūnẖ Āānsū Māī Bēẖẖ Jānā Kyā, Yōūnẖ Māātī Māī Mīl Jānā Kyā

جب شہر کے لوگ نہ رستہ دیں،کیوں بن میں نہ جا بس رام کریں
دیوانوں کی سی نہ بات کرے تو اور کرے دیوانہ کیا

Jāb Sẖẖēẖēr Kāāy Lōģ Nā Rāsttā DāēīN, Kēɨyūn Bān Māīn Nā Jā Bɨssrām Kārēɨn
Dɨwānōn’Kī Sɨ Nā Bāātt Kārry, Tū Āūr Kārāy Dēwānā Kɨyāā

kal chudhvin ki raat thi
kal chudhvin ki raat thi

کل چودھویں کی رات تھی شب بھر رہا چرچا ترا

کچھ نے کہا یہ چاند ہے کچھ نے کہا چہرا ترا

kal chudhvin ki raat thi shab bhar raha charcha tera

kuch nay kaha yeh chand hay kuch nay kaha chehra tera

ibn e insha poetry in urdu

اپنی زُباں سے کُچھ نہ کہیں گے چُپ ہی رہیں گے عاشق لوگ

تُم سے تو اِتنا ہو سکتا ہے پوچھو حال بیچاروں کا

apni zuban say kuch na kahain gaiy chup hi rahain gaiy aashiq log

tum say tu itna ho sakta hai pucho haal becharon ka

رات آ کر گُزر بھی جاتی ہے

اِک ہماری سحر نہیں ہوتی

raat aa kar guzar bhi jati hai

ik hamari sahar nahi hoti

شامِ غم کی سحر نہیں ہوتی

یا ہمیں کو خبر نہیں ہوتی

sham e gham ki seher nahi hoti

ya hami ko khabar nahi hoti

اِک سال گیا اِک سال نیا ہے آنے کو

پر وقت کا اب بھی ہوش نہیں دیوانے کو

ik saal giya ik saal niya hai aanay ko

par waqt ka ab bhi hosh nahi dewanay ko

کب لَوٹا ہے بہتا پانی بچھڑا ساجن روٹھا دوست

ہم نے اِس کو اپنا جانا جب تک ہاتھ میں داماں تھا

read more

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge