Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

amjad islam amjad poetry in urdu best 20 sher

read amjad islam amjad poetry in urdu

پیڑ کو دیمک لگ جائے یا آدم ذاد کو غم

دونوں ہی کو امجد ہم نے بچتے دیکھا کم

ہنس پڑتا ہے بہت زیادہ غم میں بھی انسان

بہت خوشی سے بھی تو ہو جاتی ہیں آنکھیں نم

pairr ko deemak lag jaye ya aadam zad ko gham

dono hi ko amjad main nay bachtay dekha kam

hans parrta hai buhat ziyada gham main bhi insan

buhat khushi say bhi tu ho jati hain aankhain num

چہرے پہ میرے زٌلف کو پھیلاو کِسی دِن

کیا روز گرجتے ہو برس جاٶ کِسی دن

chehray pay mery zulf ko phalao kisi din

kiya roz garjtay ho bars jao kisi din

نہ کوٸ غم خزاں کا ہے، نہ کوٸ خواہش ہے بہاروں کی

ہمارے ساتھ ہے امجدؔ کِسی کی یاد کا موسم

na koi gham khazan ka hai, na koi khwahish hai baharon ki

hamary sath hai amjad kisi ki yaad ka mausam

جو ہم پر گٌزری ہے جاناں وہ تٌم پر بھی گٌزرے

جو دِل بھی چاہے تو ایسی دٌعا نہیں کرتے

jo ham par guzri hai janan vo tum par bhi guzray

jo dil bhi chahy tu aisi dua nahi kartay

یہ جو خواہشوں کا پرند ہے، اسےموسموں سے غرض نہیں

یہ اٌڑے گا اپنی ہی موج میں، اِسے آب دے کہ سراب دے

amjad islam amjad poetry in urdu

یہ اور بات ٩ہے تٌجھ سے گِلہ نہیں کرتے

جو زخم تٌو نے دیۓ ہیں بھرا نہیں کرتے

ye aur baat hai tujh say gila nahi kartay

jo zakhm tu nay diye hain bharra nahi kartay

میں دیکھتی ہوں، تو بس دیکھتی ہی رہتی ہوں

وہ آئینے میں بھی اپنے ہی رنگ چھوڑ گیا

main dekhti hun tu bas dekhti hi rehti hoon

wo aainay main bhi apnay hi rang choor giya

بھیڑ میں اِک اجنبی کا سامنا اچھا لگا

سب سے چھٌپ کر وہ کِسی کا دیکھنا اچھا لگا

bherr main ik ajnabi ka samna acha laga

sab say chup kar wo kisi ka dekhna acha laga

سوال یہ ہے کہ آپس میں ہم مِلیں کیسے

ہمیشہ ساتھ تو چلتے ہیں دو کنارے بھی

swal ye hai keh aapas main ham milain kesy

hamesha sath tu chaltay hain do kinary bhi

کہتے تھے ایک پل نہ جیٕں گے تیرے بغیر

ہم دونوں رہ گٕے ہیں وہ وعدہ نہیں رہا

kehtay thay aik pal na jeyain gaiy tery baghair

ham dono reh gaiy hain vo wada nahi raha

read more

اپنی گلی میں اپنا ہی گھر ڈھونڈتے ہیں لوگ

امجدؔ یہ کون شہر کا نقشہ بدل گیا

apni gali main apna hi ghar dhundty hain log

amjad ye kon sheher ka naqsha badal giya

read more

thanx for free images

https://www.pexels.com/

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

CommentLuv badge