shaheen kabhi parwaz se thak kar nahi –

read shaheen kabhi parwaz se thak kar —

شاہیں کبھی پرواز سے تھک کر نہیں گِرتا

پُر دم ہے اگر تُو، تو نہیں خطرہِ افتاد

shaheen kabhi parwaz se thak kar nahi girta

purdam ha agar tu to nahi khatra e iftad

tu shaheen hai perwaz hai kaam tera
tu shaheen hai perwaz hai kaam tera

this is very famous sher taken from zarb e kaleem nazam asrar e peida. read full nazam.

اُس قوم کو شمشیر کو حاجت نہیں رہتی

ہو جِس کے جوانوں کی خودی صورتِ فولاد

ناچیز جہانِ مہ و پرویں تیرے آگے

وہ عالمِ مجبور ہے ، تو عالمِ آزاد

موجوں کی تپش کیا ہے ، فقط ذوقِ طلب ہے

پنہاں جو صدف میں ہے ، وہ دولت ہے خُدا داد

شاہیں کبھی پرواز سے تھک کر نہیں گِرتا

پُر دم ہے اگر تُو، تو نہیں خطرہِ افتاد

read more shairi on shaheen

تو شاہین ہے پرواز ہے کام تیرا

تیرے سامنے آسماں اور بھی ہیں

tu shaheen hai perwaz hai kaam tera

teray samnay aasman aur bhi haan

read more

thanks for free image download

https://unsplash.com

One thought on “shaheen kabhi parwaz se thak kar nahi –

  • October 28, 2020 at 11:02 am
    Permalink

    Your common sense should be taken as the rule when it comes to this topic.

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge
%d bloggers like this: