ranj ki jab guftagu hone lagi lyrics

read ghazal ranj ki jab guftagu hone lagi lyrics

رَنج کی جَب گٌگفتگو ہونے لگی

آپ سے تٌم، تٌم سے تٌو ہونے لگی

چاہیے پیغام بر دونوں طرف

لٌطف کیا جب دٌو بہ دٌو  ہونے لگی

میری رٌسوائی کی نوبت آگئی

ہے تیری تصویر کِتنی بے حجاب

ہر کِسی کے رو بہ رو ہونے لگی

اٌن کی شہرت کٌو بہ کٌو ہونے لگی

نا اٌمیدی بڑھ گئی ہے اِس قدر

آرزو کی آرزو ہونے لگی

اَب کے مِل کے دیکھیے کیا رنگ ہو

پھر ہماری جٌستجو ہونے لگی

داغؔ اِتراۓ ہوۓ پھرتے ہیں آج

شاید اٌن کی آبرو ہونے لگی

ghazal ranj ki jab guftagu hone lagi lyrics

ranj ki jab guftgu hony lagi

aap say tum, tum say tu honay lagi

chahiye pegham ber dono taraf

lutf kiya jab duo ba duo honay lagi

meri ruswai ki nobat aa gai

un ki shuhrat ko ba ko honay lagi

hai teri tasveer kitni bay hijab

har kisi kay rub a ru honay lagi

naa umeedi bharr gai hai iss qadar

aarzo ki aarzo hony lagi

ab kay mil kay dekhiye kiya rang ho

phir hamari justju hony lagi

dagh ittraye huwy phirty hain aaj

shayad un ki aabro honay lagi

read more

thanx for free image download

https://www.pexels.com/

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge
%d bloggers like this: