Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

hum se badal gaya woh nigahein lyrics

read hum se badal gaya woh nigahein lyrics

ہم سے بدل گیا وہ نگاہیں تو کیا ہٌوا

زندہ ہیں کتنے لوگ مٌحبّت کیے بغیر

گٌزرے دِنوں میں جو کبھی گونجے تھے قہقہے

اَب اپنے اختیار میں وہ بھی نہیں رہے

قسمت میں رہ گٸ ہیں جو آہیں تو کیا ہٌوا

صدمہ یہ جھیلنا ہے شِکایت کیے بغیر

وہ سامنے بھی ہوں تو نہ کھولیں گے ہم زٌباں

لِکھی ہے اس چہرے پہ اپنی ہی داستاں

اس کو ترس گٸ ہیں یہ باہیں تو کیا ہٌوا

وہ لوٹ جاۓ ہم پہ عنایت کیے بغیر

پہلے قریب تھا کوٸ اب دوریاں بھی ہیں

اِنسان کے نصیب میں مجبوریاں بھی ہیں

اپنی بدل چٌکا ہے وہ راہیں تو کیا ہٌوا

ہم چٌپ رہیں گے اس کو ملامت کیے بغیر

hum se badal gaya woh nigahein lyrics

ham se badal gaya woh nigahain tu kiya huva

zinda hain kitnay log muhabbat kiye bagher

guzray dino main jo kabhi gonjay thay qehqahy

ab apnay ikhtiyar main vo bhi nahi rahy

qismat main reh gai hain jo aahain tu kiya huva

sadma ye jheelna hai shikayat kiye bagher

vo samnay bhi hon tu na kholain gaiy ham zuban

likhi hai us chahry pay apni hi dastan

us ko taras gai hain bahain tu kiya huwa

wo laut jaye ham pay inayat kiye bagher

pehlay qareeb tha koi ab dooriyan bhi hain

insan kay naseeb main majboriyan bhi hain

apni badal chuka hai vo rahain tu kiya huva

ham chup rahain gaiy us ko mulamat kiye bagher

read more

ہم سے بدل گیا وہ نگاہیں تو کیا ہٌوا

زندہ ہیں کتنے لوگ مٌحبّت کیے بغیر

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge