aik bas tu hi nahi mujh se lyrics

read ghazal aik bas tu hi nahi mujh se lyrics

ایک بَس تٌو ہی نہیں مٌجھ سے خفا ہو بیٹھا

میں نے جو سنگ تراشا وہ خٌدا ہو بیٹھا

اٌٹھ کے منزل ہی اگر آئے تو شاید کچھ ہو

شوقِ منزل تو میرا آبلہ پا ہو بیٹھا

مصلحت چھینی گئی قوتِ گٌفتار مگر

کٌچھ نہ کہنا ہی میرا  میری صدّا ہو بیٹھا

شٌکریہ اے میرے قاتِل اے مسیحا میرے

Advertisement

زہر جو تٌو نے دِیا تھا وہ دوا ہو بیٹھا

جان شہزادؔ کو من جُملہء اعدا پا کر

ہٌوک وہ اٌٹھی کہ جی تن سے جٌدا ہو بیٹھا

ghazal aik bas tu hi nahi mujh se lyrics

aik bas tu hi nahi mujh say khafa ho betha

main nay jo sang tarasha wo khuda ho betha

uth kay manzil hi agar aaye tu shayad kuch ho

shauq e manzil tu mera aabla pa ho betha

maslehat cheeni gai quwat e guftar magar

kuch na kehna hi mera meri sada ho betha

shukriya aye mery qatil aye masiha mery

zehr jo tu nay diya tha wo dawa ho betha

jan shehzad ko min jumla e aada pa kar

hook wo uthi keh ji tan say juda ho betha

read more

thanx for free image download

https://www.pexels.com/

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge
%d bloggers like this: