ye na thi hamari qismat lyrics in urdu

ghazal ye na thi hamari qismat lyrics in urdu

یہ نہ تھی ہماری قسمت کہ وصالِ یار ہوتا

اگر اور جیتے رہتے یہی انتظار ہوتا

تیرے وعدے پر جیئے ہم تو یہ جان جھوٹ جانا

کہ خوشی سے مَر نہ جاتے اگر اعتبار ہوتا

تیری نازکی سے جانا کہ بندھا تھا عہد بودا

کبھی تُو نہ توڑ سکتا اگر اُستوار ہوتا

کہوں کِس سے میں کہ کیا ہے شبِ غم بٌری بلا ہے

مٌجھے کیا بٌرا تھا مرنا اگر ایک بار ہوتا

کوئی میرے دِل سے پوچھے تیرے تیرِ نیم کش کو

یہ خلش کہاں سے ہوتی جو جگر کے پار ہوتا

یہ کہاں کی دوستی ہے کہ بنے ہیں دوست ناصح

کوئی چارہ ساز ہوتا ، کوئی غم گُسار ہوتا

رَگِ سنگ سے ٹپکتا ، وہ لہو کہ پھر نہ تھمتا

جِسے غم سمجھ رہے ہو یہ اگر شرار ہوتا

ہوئے مَر کہ ہم جو رُسوا،  ہوئے کیوں نہ غرقِ دریا

نہ کبھی جنازہ اُٹھتا نہ کہیں مزار ہوتا

یہ مسائلِ تصوف یہ تیرا بیانِ غالبؔ

تُجھے ہم ولی سمجھتے،  جو نہ بادہ خوار ہوتا

ghazal ye na thi hamari qismat lyrics in urdu

ye na thi hamari qismat keh visal e yaar hota

agar aur jeety rehty yahi intizar hota

Tery waday per jiye ham tu yeh jan jhot jana

Keh khushi say mar na jatay agar eitbar hota

Teri nazki say jana keh bandha tha ehad e boda

Kabhi tu na torr sakta agar ustawar hota

kahon kis say main keh kiya hai shab e gham buri balla hai

mujhy kiya bura tha marna agar aik baar hota

koi mery dil say poochay tery teer e neem kash ko

ye khalish kahan say hoti jo jigar kay paar hota

Yeh kahan ki dosti hai keh bany hain dost nasah

Koi chara saz hota koi gham gusar hota

Rag e sang say tapakta wo lahu keh phir na thamta

Jisay gham samjh rahy ho yeh agar sharar hota

Huwar mar kay ham jo ruswa huway kiyun na gharq e darya

Na kabhi janaza uthta na kahin mazar hota

Ye masail e teasawaf ye tera biyan e ghalib

Tujhy ham wali samajhtay jo na bada khwar hota

read more

thanx for free image download

https://unsplash.com/

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge
%d bloggers like this: