Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

december poetry in urdu 10 best sher

read december poetry in urdu, november poetry in urdu

دِل کی چوٹوں نے کبھی چَین سے رہنے نہ دِیا

جب چلی سرد ہوا میں نے تٌجھے یاد کیا

اِس کا رونا نہیں کیوں تٌم نے کیا دِل برباد

اِس کا غم ہے کہ بہت دیر میں برباد کِیا

dil ki choton nay kabhi chain say rehnay na diya

jab chalii sard hawa main nay tujhy yaad kiya

iss ka rona nahi kiyun tum nay kiya dil barbad

iss ka gham hai key buhat dair main barbad kiya

mujhy mausam say kiya lena november ho december ho
mujhy mausam say kiya lena november ho december ho

مٌجھے موسم سے کیا لینا نومبر ہو دسمبر ہو

میرے سب رنگ تٌجھ سے ہیں بہاروں کے خزاٶں کے

mujhy mausam say kiya lena november ho december ho

mery sab rang tujh say hain baharon kay khazaon kar

halki halki si sard hawa, halka halka sa dard e dil
halki halki si sard hawa, halka halka sa dard e dil

ہلکی ہلکی سی سرد ہوا، ہلکا ہلکا سا درد دل

انداز اچھا ہے اے دسمبر تیرے آنے کا

halki halki si sard hawa, halka halka sa dard e dil

andaz acha hai aye december tery aanay ka

sunehri sham dhaltay saaye
sunehri sham dhaltay saaye

سٌنہری شام ڈھلتے ساۓ

ٹھنڈا نومبر اور گرم چاۓ

sunehri sham dhaltay saaye

thanda november aur garam chaye

december poetry in urdu

usay kehna khazain aa gai hain ab tu laut aaye
usay kehna khazain aa gai hain ab tu laut aaye

اسے کہنا خزإیں آ گٸ ہیں اب تو لوٹ آۓ

اٌسے کہنا دسمبر کی ہوإیں یاد کرتی ہیں

usay kehna khazain aa gai hain ab tu laut aaye

usay kehna december ki hawain yaad karti hain

har taraf ho rahi hai tujh par shayari
har taraf ho rahi hai tujh par shayari

ہر طرف ہو رہی ہے تٌجھ پر شاعری

اے دسمبر تو ہی بتا تیری خاصیت کیا ہے

har taraf ho rahi hai tujh par shayari

aye december tu hi bata teri khasiyat kiya hai

sard december lambi raatain ujrra dil aur tanha main
sard december lambi raatain ujrra dil aur tanha main

سرد دسمبر لمبی راتیں اٌجڑا دِل اور تنہا میں

کٌچھ چادر سے لپٹی یادیں اور چادر میں لپٹا میں

sard december lambi raatain ujrra dil aur tanha main

kuch chadar say lipti yaadain aur chadar main lipta main

aakhri chand din december kay
aakhri chand din december kay

آخری چند دِن دسمبر کے

ہر برس ہی گراں گٌزرتے ہیں

aakhri chand din december kay

har bars hi garan guzarty hain

pichlay bars tum sath thay mery aur december tha
pichlay bars tum sath thay mery aur december tha

پچھلے برس تٌم ساتھ تھے میرے اور دسمبر تھا

مہکے ہٌوے دن رات تھے میرے اور دسمبر تھا

pichlay bars tum sath thay mery aur december tha

mehkay huwy din raat thay mery aur december tha

دسمبر آ گیا ہے اب قَسّم سے یاد مت آنا

پٌرانی چوٹ اکثر سردیوں میں درّد دیتی ہے

dcambar aa giya ha ab qasam say yaad maat ana

purani chot aksar sardiyoun main dard deti ha

بہت سے غم دسمبر میں دسمبر کے نہیں ہوتے

اسے بھی جون کا غم تھا مگر رویا دسمبر میں

buhat say gham december kay decambar kay nahi hoty

usay bhi june ka gham tha magar roya december main

read more

thanx for free images

https://unsplash.com/s/photos/sunset-girl

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge

%d bloggers like this: