Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

Ahmad nadeem qasmi poetry in urdu 2 lines

read Ahmad Nadeem qasmi poetry in urdu 2 lines

اندازہو بہو تیری آواز پا کا تھا

دیکھا نکل کے گھر سے تو جھونکا ہوا کا تھا

andaz hu-ba-hu teri awaz e paa ka tha

dekha nikal kay ghar say tu jhonka hawa ka tha

اگر ہے موت میں کٌچھ لٌطف تو بس اِتنا ہے

کہ اِس کے بعد خٌدا کا سٌراغ پإیں گے ہم

agar hai maut main kuch lutf tu bas itna hai

keh iss kay baad khuda ka suragh payen gaiy

مٌسافر ہی مٌسافر ہر طرف ہیں

مگر ہر شخص تنہا جا رہا ہے

musafir hi musafir har taraf hain

magar har shakhs tanha ja raha hai

Ahmad nadeem qasmi poetry in urdu

اِک عُمر سے فریبِ سفر کھا رہے ہیں ہم

معلوم ہی نہیں کہ کِدھر جارہے ہیں ہم

ik umer say fareb e safar kha rahay hain ham

maloom hi nahi keh kidhar ja rahay hain ham

کون کہتا ہے کہ موت آئی تو مَر جاوں گا

میں تو دریا ہوں ، سمندر میں اُتر جاوں گا

kon kehta hai ke maut aai tu marr jaon ga

main tu darya hoon samundar main uter jaon ga

حوصلہ تُجھ کو نہ تھا مُجھ سے جُدا ہونے کا

ورنہ کاجل تیری آنکھوں میں نہ پھیلا ہوتا

hosla tujh ko na tha mujh say juda honay ka

warna kajal teri aankhon main na phaila hota

جِس بھی فنکار کا شاہکار ہو تٌم

اس نے صدیوں تٌمھیں سوچا ہو گا

jis bhi fankar ka shahkar ho tum

us nay sadiyoun tumhain socha ho ga

read more

thanx for free image download

https://unsplash.com/

Leave a Reply

Your email address will not be published.

CommentLuv badge

%d bloggers like this: